فیس بک کے بڑے لکھاری

یہ اصطلاح آج کل جابجا دکھائی دے رہی ہے۔ ایک نے کہا کہ سارے بڑے لکھاری پاگل ہوگئے ہیں۔ ہر مسئلے کو ایسا ایشو بناتے ہیں کہ جس کی کوئی انتہا نہیں۔
میں نے پوچھا بڑے لکھاری؟ وہ کون ہیں؟
کہنے لگے فلاں اور فلاں بڑے۔
میں نے پوچھا وہ کیسے بڑے ہوگئے؟
کہنے لگے بڑے نہیں ہیں؟ اتنے ڈھیر سارے لائک آتے ہیں ان کی پوسٹوں پر۔؟
میں نے عرض کیا "دیکھیں، آپ شاید ابھی جمعہ جمعہ آٹھ دن سے فیس بک استعمال کر رہے ہیں اس لیے ایسا کہہ رہے ہیں۔ آپ کو شاید نہیں معلوم کہ فیس بک پر زیادہ لائک لینا کسی کی علمی یا ادبی قابلیت کی نشانی نہیں ہے۔ اور اگر ہے تو پھر میں آپ کو چند فیسبک اکاؤنٹس کا لنک دے دیتا ہوں جن پر لائکس کی تعداد آپ کے بڑے لکھاریوں سے سیکڑوں گنا زیادہ ہے۔"
"اچھا" اب تک انکا منہ ٹیڑھا ہوچکا تھا۔
"پھر یہ عرض کردوں کہ فیس بک پر گنتی کے تین چار افراد کے علاوہ کوئی لکھاری ایسا نہیں ہے کہ جو لکھت کے پیمانوں پر پورا اترتا ہو۔ جنہیں آپ بڑے بڑے لکھاری کہہ رہے ہیں، ان کی تحریروں میں اس قدر فاش غلطیاں موجود ہوتی ہیں کہ اردو کا ایک ادنی سا طالبِ علم بھی انہیں پکڑ سکتا ہے (بشرطیکہ اس نے اردو پڑھی ہو)۔" میں نے بات مکمل کی۔ "
"اچھا تو پھر فلاں صاحب کو جو اتنے لوگ پڑھتے ہیں، اور داد دیتے ہیں تو کیا وہ پاگل ہیں؟" انہوں نے لقمہ دیا۔
"آپ میری بات نہیں سمجھے۔ دیکھیے لوگوں کو کسی نہ کسی چیز کا چسکا ہوتا ہے۔ غلط اور صحیح کا فیصلہ تعداد دیکھ کر کرنا ممکن نہیں ہوتا۔ اس کے لیے مقررہ پیمانے اور معیارات ہوتے ہیں۔ میں پھر عرض کروں گا کہ جنہیں آپ بڑے لکھاری کہہ رہے ہیں وہ تو انتہائی ناپختہ لکھاری ہیں۔ انہیں ابھی مزید کئی سال کی ریاضت درکار ہے۔"
اس پر وہ کہنے لگے کہ آپ کی بات سمجھ سے بالاتر ہے۔ میں نے ان کو مزید سمجھانا چاہا۔
"حضور، فیس بکی حضرات کے اس حلقے کا مسئلہ یہ ہو گیا ہے کہ انہوں نے فیس بکی مقبولیت کو پیمانہ بنا لیا ہے۔ بائیس کروڑ عوام میں سے تین ہزار لوگ اور دو ہزار جعلی آئیڈیاں اپنی فیس بک فرینڈ لسٹ میں رکھ کر اگر آپ اس پر یہ فیصلہ صادر فرماتے ہیں کہ کہ فلاں صاحب بڑے لکھاری ہیں تو مجھے کہنا پڑے گا کہ آپ کولھو کے بیل کی طرح آزاد گھوم رہے ہیں۔ آپ کے بڑے لکھاری آپ ہی سنبھالیں۔ ہم سے تو نہ ہو سکے گا۔"

(122 مرتبہ دیکھا گیا)

مزمل شیخ بسمل

سلجھا ہوا سا فرد سمجھتے ہیں مجھ کو لوگ الجھا ہوا سا مجھ میں کوئی دوسرا بھی ہے

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

تبصرہ کریں