لسی - ہر پریشانی کا حل

 (یہ مضمون صرف مذاق کے لئے ہے جو اسے سرئیس لینا چاہے وہ اپنی ذمہ داری پہ لے شکریہ)

لسی ایک بہت بڑی نعمت ِ خداوندی ہے۔ اس کی افادیت کو آج تک کوئی بھی کسی دور میں نہیں جھٹلا سکا ہے۔ اور نا ہی آئندہ کوئی ایسا کر سکتا ہے۔ کیوں کہ لسی کہ بارے میں ایک بہت بڑے آدمی کا بین الاقوامی قول ہے کہ جس نے لسی نہیں پی اس نے لسّی نہیں پی، واہ سبحان اللہ کیا بات کہی جناب نے۔ بہرحال لسی کے فوائد اتنے زیادہ ہیں کہ اگر اس پر کوئی بندہ کتاب لکھنا چاہے اور لکھنا شروع کرے اور اس کو زمین مریخ اور چاند کے سارے قلم اور کاغذ لا دیے جائیں اور وہ لکھے پھر اس کی اگلی نسل لکھے پھر اگلی اور اس طرح اس کی سات سو بیس نسلیں لکھتے لکھتے تھک کر مر جائیں گی لیکن لسّی کے فوائد پورے نہیں ہوں گے۔ لسی میں ایک بہت ہی خاص بات یہ ہے کہ وہ بندے کو چست کر دیتی ہے۔ میں نے یہ بات امی کو کہی تو امی کہتی اؤے اس سے نیند آتی ہے ۔ میں نے پوچھا نیند کے بعد بندہ چست نہیں محسوس کرتا ؟ امی کہتی ہاں پھر تو چست ہوتا ہے ۔ تو میں نے بھی یہی تو کہا کہ لسّی چستی پیدا کرتی ہے۔ امی کہتی واہ پتر لے ایک کلو دہی لا کے مجھے لسی بنا کے دے آج تو میں نے تیری شادی کی رضائی میں روئی ڈالنی ہے اور تیرے ہونے والی بیگم کے سوٹ تیا ر کرنے ہیں آج تو مجھے چستی کی اشد ضرورت ہے۔

ایک بات کا آج تک کسی کو نہیں پتا ۔ کیوں کہ میں نے وہ بات کسی کو بتائی ہی نہیں۔ وہ بات نہیں اصل میں میرا ایک بہت ہی غیر معروف خواب ہے جو آج تک میرے سینے کے بائیں طرف دفن ہے۔ وہ یہ کہ بابا جی قائدِ اعظم نے پارلیمنٹ کے دوسرے اجلاس میں چائے کی جگہ لسی چلانے کا آرڈر دیا۔ اور ساتھ میں یہ بھی کہا کہ ہر اجلاس میں کسی بھی اہم مشورے سے پہلے سب کو لسّی پلائی جائے۔ ہمارے یہاں ایک بین الاقوامی سطح کے شاعرِ جنوب رہتے ہیں میرا سو فیصد قرینِ قیاس ہے ان کے متعلق کے وہ ہر شعر سے پہلے ڈیڑھ گلاس لسی ضرور پیتے ہوں گے۔ آج سے سینکڑوں سال پہلے لسّی سے ہر طرح کا علاج کیا جاتا تھا ۔ کسی کو بخار یا موشن لگتے تو اس کو چاٹی کی لسی کے دو جگ پلائے جاتے تو وہ بالکل ایسے ہی ٹھیک ہو جاتا تھا جیسے آج پاکستان کے وزیر اعظم لندن سے علاج کروا کہ ٹھیک ہو جاتے ہیں۔ مجھے آج تک یہ بات سمجھ نہیں آئی کہ ان کہ آج تک لسّی سے علاج کرنے کا کیوں نہیں کہا گیا۔ یقین کریں ایک بار وہ لسی سے اپنا علاج کروا لیں ان کی ہر بیماری ایسے ہی غائب ہی جائے گی جیسے لاہور سے گدھے غائب ہو گئے ہیں۔ ہاں تو ہم بات کر رہے تھے علاج کی، تو آج سے کروڑوں اربوں سال پہلے لسی سے ٹوٹی ہڈیاں بھی جوڑی جاتی تھی۔ خون کی کمی میں لسّی کی ڈرپ لگائی جاتی تھی جس سے خون میں سفید سیل پیدا ہو کر لال سیل پیدا ہونے کا سبب بنتے تھے۔ لسّی انسان کو کبھی بھی بوڑھا نہیں ہونے دیتی۔ لسی پینے سے انسان اپنے آپ کو بلکل ایسا محسوس کرتا ہے جیسے بارش کے دنوں میں ہمارے وزیر اعلیٰ لمبے لمبے جوتوں کے ساتھ بارش کے پانی میں محسوس کرتے ہیں۔ تو جناب لسی ہی انسان کا سب کچھ ہے اور سچ میں لسّی کے بغیر انسان کچھ بھی نہیں۔

یہ بھی پڑھیں:   قطعہ اور رباعی میں فرق

انسان کو کم سے کم زندگی میں ایک بار تو لسّی ضرور پینی چاہیے تاکہ اسے پتا چلے کہ لسی نا پیا تو پھر کیا جیا۔ مجھے تو یہ سوچ کے بھی خوف آتا ہے کی اگر آج لسی نا ہوتی تو ہم دہی کا کیا کرتے۔؟ یہ لسّی ہی تو ہے جس نے ہمیں اس قابل بنایا کہ ہم دہی کا ٹھیک استعمال کر سکیں۔

میرے خیال سے ہر بندے کے پاس ہر وقت ایک چھوٹی بوتل لسّی کی ضرور ہونی چاہیے تاکہ اسے لسّی کے لیے کسی کا منہ نہ تکنا پڑے۔ بندہ جہیز میں کچھ بھی نا دے لسّی دے تو مطلب دلہے کو دنیا جہان کی ساری نعمتیں مل گئیں، بلکہ دودھ پلائی کی بجائے لسّی پلائی ہو تو شادی کا بھی مقصد پورا ہو جائے۔ میاں بیوی کی لڑائی ہو جائے تو صرف ایک لسّی ہی ہے جو ان کی ساری خوشیاں واپس لا سکتی ہے۔ میری پرسنل تحقیق کے مطابق اگر کالا انسان انیس دن تک لگاتار ساڑھے دو جگ لسّی کے پیے تو اس کے چہرے پر لالی آنی شروع ہو جاتی ہے۔ اگر کسی کو موٹا ہونا ہے تو وہ لسّی پیے، یا اگر کسی کو اپنا موٹاپا دور کرنا ہے تو وہ لسّی پیے۔ غرض دنیا کا کوئی ایسا مسئلہ نہیں جو لسّی سے نا حل کیا جا سکے۔

یہ بھی پڑھیں:   لاہور کی سیر

لسّی کو اگر پارس کا مائع کہیں تو غلط نا ہو گا۔ یہ جو بڑے بڑے لوگ ہیں نا یہ لسی کی ہی پیدا وار ہیں۔ لسّی انسان سے وہ کام کرا سکتی ہے جو ایک عورت انسان سے نہیں کرواسکتی۔ اگر آپ کو کسی سے کوئی کام کروانا ہے تو آپ اسے لسّی پلائیں آپ کا کام ہو جائے گا۔ اگر کوئی آپ کا دشمن ہے اسے لسّی گفٹ کریں شام سے پہلے ہی وہ بدلے میں آپ سے ہاتھ ملانے کے ساتھ آپ کو لسّی کے دو ٹرک گفٹ کرے گا۔ ایک بہت اہم استعمال لسّی کا یہ ہے کہ وہ آپ کو پروگرامر بننے میں بہت اہم کردار ادا کرتی ہے۔ یہ تو آپ جانتے ہی ہیں کہ پروگرامر دنیا کا سب سے بورنگ انسان ہوتا ہے۔ اس کی بوریت دور کرنے کا واحد علاج لسّی ہے۔ پروگرامر سے اگر کسی پروبلم کی لاجک نا بن رہی ہو تو اسے لسی پینی چاہیے، یقین کریں لسّی پینے کے سات منٹ بعد ایسی ایسی لاجک اس کے زہن میں آئیں گی کے بل گیٹس بھی اس کے آگے لسی بھرتا نظر آئے گا۔ (میرا مطلب ہے پانی بھرتا نظر آئے گا) ۔ بہر حال لسّی کے فوائد میں یہاں نہیں بیان کر سکتا۔ ہاں اگر کسی کو لسی سے اپنا کوئی بھی مشکل سے مشکل کام حل کروانا وہ تو وہ مجھ سے رابطہ کرے میں آپ کے ہر مسئلے کو لسی سے ایسے ہی حل کر دونگا جیسے نمک لسی میں حل ہی کر لسی کو لسی بنا دیتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   وحشی اسے کہو جسے وحشت غزل سے ہے:: بشیر بدر

تحریر: عبد الحنان

(377 مرتبہ دیکھا گیا)

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

3 تبصرے

  1. جناب ۔ آپ نے جیتے جی لسّی کی توہین کی ہے اور خواب کے حوالے سے بابائے قوم کی ۔ اس کی پاداش میں میں تھریک پیش کرتا ہوں کہ ہر قسم کی لسی آپ کیلئے ممنوع قرار دے دی جائے ۔ آپ کو روزانہ پیالی در پیال کڑک چائے یا کراچی کی گولی مار چائے پلائی جائے ۔ تاکہ آپ چیخیں کہ ”ہے کوئی اللہ کا بندہ جو مجھے لسی پلا دے“۔ آخر میں گستاخی کی معافی
    http://www.theajmals.com

  2. RAI AZHAR IQBAL says:

    لسی بھی اللہ پاک کی بہت بڑی نعمت ہے لیکن آپ چائےپیتے جائیں کیونکہ جیسے جیسے لسی نایاب ہوتی جارہی ہے پاکستان سمیت دنیا بھر کےحالات ماَشاَاللہ بہتری کی جانب گامزن ہیں اس کی بڑی وجہ یہ ہے کہ جتنی بڑی کرسی اتنا بڑاچائے کا مگ تمام حکومتی اہل کارچائے پی پی کر ہی تو اتنے سنہری فیصلےکررہےہیں

    رائے اظہراقبال

  3. ibrar says:

    lassi ko english mi kia kehtey hn

تبصرہ کریں