چکن پاکس - احتیاطی تدابیر

ایک صاحب نے سوال کیا ہے کہ بچوں کو چکن پاکس نکل آئےہیں۔ احتیاطی تدابیر بتا دیں۔

جواب: چکن پاکس کے خلاف عام طور پر بچپن میں ٹیکے لگتے ہیں۔ اگر ویکسین ہو چکی ہیں تو دوبارہ کسی ویکسین کی ضرورت نہیں ہے۔ ہاں البتہ ڈاکٹر آپ کو اس سلسلے میں ایک اینٹی وائرل لکھے گا۔
عام طور پر کوئی ایسی خطرناک بیماری نہیں ہوتی۔ خارش وغیرہ کے لیے ڈاکٹر سے الرجی کی دوا لکھوا لیں یا قریبی اچھے میڈیکل سٹور سے کوئی الرجی کی دوا پوچھ کر لے لیجیے۔ یا پھر ملتانی مٹی یا کوئی بھی ایسی چیز جو خارش ختم کرے۔ اس میں کوئی قید نہیں ہے۔ ہاں بچے کو بار بار کھجانے سے روکنا ضروری ہے ورنہ جسم پر زخم بن جائیں گے۔ بخار وغیرہ کے لیے بھی یہی ہے کہ بخار کم کرنے والی دوائیں جیسے پیراسیٹامول یا بروفین وغیرہ لیجیے۔
عام طور پر دس سے بارہ دن میں چکن پاکس خود ہی ٹھیک ہو جاتے ہیں۔
کوشش کریں کہ اس دوران بچے کو دوسرے بچوں کو دور رکھیں کیونکہ یہ متعدی بیماری ہے۔ اور جیسے ہی ایک بچہ چکن پاکس والے بچے سے ملےگا تو یہ بیماری اکثر و بیشتر اس بچے کولگ جاتی ہے۔
والدین کو چاہیے کہ اگر چکن پاکس کے ویکسین آپ نے بھی نہیں لی ہے تو اپنے آپ بھی ویکسین کروائیں تاکہ بچے کی تیمارداری میں خطرہ نہ ہو۔

یہ بھی پڑھیں:   میں کیوں لکھتا ہوں ؟

درد ختم کرنے والی دوائیں اور ان کے اثرات

کچھ افواہیں اور مغالطے بھی اس طرح کے پائے جاتے ہیں کہ چکن پاکس میں مریض کو نہانے سے پرہیز کرنا چاہیے۔ اسی طرح ٹھنڈی چیزیں کھانے سے پرہیز کرنا وغیرہ۔

حالانکہ ان سب باتوں کی میڈیکل سائنس میں کوئی حقیقت نہیں ہے۔
نہانے میں بھی کوئی قید نہیں ہے۔ بس نہانے کے بعد کسی ایسے کپڑے سے جسم نہ رگڑا جائے کہ بعد میں پریشانی ہو۔ بہتر یہ ہوتا ہے کہ نہانے کے بعد کوئی نرم سا کپڑا (جیسے عموماً بنیان کا ہوتا ہے) اس کو جسم پر رکھ رکھ کر جسم کو مکمل طور پر خشک کیا جائے۔

یہ بھی پڑھیں:   گھر سے بھاگنے والی لڑکی

کچھ  لوگ پوچھتے ہیں کہ چکن پاکس کے بعد جو نشانات رہ جاتے ہیں انہیں کیسے ختم کیا جائے؟

جواب یہ ہے کہ در اصل چکن پاکس سے نشانات نہیں بنتے بلکہ کھجانے سے بنتے ہیں جو کہ بعد تک باقی رہتے ہیں۔
اب جن کے نشانات بن چکے ہیں ان کو چاہیے کہ ڈرماٹولوجسٹ (سکن سپیشئلسٹ) سے رابطہ کرلیں۔
احتیاط یہ ہے کہ چکن پاکس ہونے پر کھجانے کی بجائے خارش کو ختم کرنے کے لیے دوسرے طریقے استعمال کرنے چاہیے ہیں۔ اس میں عام طور پر ایک کال آمائن لوشن (Calamine Lotion) آتا ہے۔ تین تین گھنٹے کے وقفے سے لگائیں۔ نہانے کے پانی میں کھانے کا سوڈا ڈال کر نہانا بھی مفید ہے۔ اس کے علاوہ خارش کی جگہ برف لگانے سے بھی آرام ملتا ہے۔ اس کے علاوہ وہی تدابیر ہی جو اوپر لکھی ہیں کہ الرجی کے لیے دوا لیجیے۔

یہ بھی پڑھیں:   لباس کا المیہ

(367 مرتبہ دیکھا گیا)

مزمل شیخ بسمل

سلجھا ہوا سا فرد سمجھتے ہیں مجھ کو لوگ الجھا ہوا سا مجھ میں کوئی دوسرا بھی ہے

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

تبصرہ کریں