موضوع: آپ کا کلام

0

اسمائے حسنی (منظوم)

٭٭٭ اسمائے حسنی نظم ٭٭٭ اللہ ، نور ، رحمٰن ، خالق ، غفور ، باعث رافع ، شکور ، باقی ، خافض ، صبور ، وارث اس کی ہے ذات یکتا ، اس...

0

امیر خسرو کی غزل کا منظوم اردو ترجمہ

بندے نے ایک سال قبل امیر خسرو کی مشہور فارسی غزل (ہر شب منم فتادہ بہ گرد سرای تو) کا اردو میں منظوم ترجمہ کیا تھا ، دیکھیے کہاں تک کام یابی ملی ہے۔...

0

لال شہباز قلندر کی مشہور غزل کا منظوم اردو ترجمہ

شیخ سید عثمان شاہ مروَندی علیہ الرحمہ معروف بہ "لال شہباز قلندر" کی مشہور فارسی غزل "نمی دانم کہ آخر چوں دمِ دیدار می رقصم" کا بندے نے منظوم ترجمہ کرنے کی اپنی سی...

0

سوچتے ہیں وہ بار بار ہمیں

یوں ہے لگتا کبھی کبھار ہمیں سوچتے ہیں وہ بار بار ہمیں ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔...

0

عشق باقی رہا نہ ہم لوگو !

پھر ہوئی آنکھ اُن کی نم لوگو! یعنی کچھ اور بھی ہیں غم لوگو! کس سے شکوہ کریں عداوت کا ہم پہ اپنوں کے ہیں کرم لوگو! درد اتنے کیے رقم لوگو! اب تو...

0

آسمانِ فلسفہ کا دائرہ محدود ہے

سوچتی ہوں گی کبھی پھولوں کی نازک پتیاں کیوں ہمارے پاس منڈلاتی ہیں اتنی تتلیاں ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔...

0

مری عمر بھر کی کمائی تھی

نہ خدا نہ حق میں خدائی تھی جو ہوا اُسی میں بھلائی تھی تھے بے جان سے مرے قہقہے تری آنکھ بھی تو بھر آئی تھی نہ ملن ہوا نہ جدائی تھی مری جان...

0

رات یوں ہی بسر نہیں کرتے

آہ شام و سحر نہیں کرتے غم کو هم مشتہر نہیں کرتے دوست کہتے ہو خود کو تم میرا دوست ایسا مگر نہیں کرتے منزلوں کا پتا تو دیتے ہو ساتھ میرے سفر نہیں...

3

دنیا میں آکے خلد کے مہمان بٹ گئے

حکمِ خدا سے ہٹتے ہی ارمان بٹ گئے دنیا میں آکے خلد کے مہمان بٹ گئے ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔...

0

حمدِ باریِ تعالی از: مزمل شیخ بسمل

گواہی مل رہی ہے ہر شجر سے ہے خدا واحد زمیں پر آکے نکلی ہیں یہ شاخیں جب اگا واحد نہیں خالق نہیں ہے رب کوئی تیرے سوا واحد کوئی بھی آج تک ایسا...